Do you want to remove all your recent searches?

All recent searches will be deleted

‫جس کی جھنکار میں دل کا آرام تھا وہ تیرا نام تھا- قتیل شفائی‬

3 years ago37 views

جس کی جھنکار میں دل کا آرام تھا وہ تیرا نام تھا
میرے ہونٹوں پہ رقصاں جو اک نام تھا وہ تیرا نام تھا

مجھ سے منسوب تھیں داستانیں کئی ایک سے ایک نئی
خوبصورت مگر جو اک الزام تھا وہ تیرا نام تھا

غمِ نے تاریکیوں میں اُچھالا مجھے مار ڈالا مجھے
اک نئی چاندنی کا جو پیغام تھا وہ تیرا نام تھا

تیرے ہی دم سے ہے یہ قتیل آج بھی شاعری کاولی
اس کی غزلوں میں کل بھی جو الہام تھا وہ تیرا نام تھا

Report this video

Select an issue

Embed the video

‫جس کی جھنکار میں دل کا آرام تھا وہ تیرا نام تھا- قتیل شفائی‬
Autoplay
<iframe frameborder="0" width="480" height="270" src="https://www.dailymotion.com/embed/video/x3g0hff" allowfullscreen allow="autoplay"></iframe>
Add the video to your site with the embed code above

Report this video

Select an issue

Embed the video

‫جس کی جھنکار میں دل کا آرام تھا وہ تیرا نام تھا- قتیل شفائی‬
Autoplay
<iframe frameborder="0" width="480" height="270" src="https://www.dailymotion.com/embed/video/x3g0hff" allowfullscreen allow="autoplay"></iframe>
Add the video to your site with the embed code above